!بس۱قدم روزانہ

بڑے ہو جائیں، پھل پھول جائیں، دبلے ہوجائیں، چوکس ہوجائیں، روز کے کھلے کٹے روز باندھتے جائیں، سٹریس نہ لیں، صحت مند عادات اپنا لیں، بل گیٹس نہ بنیں، جیف بیزوس اور ایلان مسک بھی مت بنیں، تقریباً وہی رہیں جو ہیں، بس آج %1 کل سے بہتر ہوجائیں.

کایا پلٹ ہر ایک کو پسند ہے. یہ وہ کہانی ہے جو ہر ایک کے دل سے کلام کرتی ہے. محبت ہوئی، دل تڑخا، بس یہ ہوگیا، مرشد نے نظر کرم کی، مقدر بدل گئے. دس ڈالر جیب میں رہ گئے تھے، سو ملین ڈالرز کی لاٹری نکل آئی. یہ سب مَزے کا ہے، مگر فلمی ہے. جو زندگی روز گزارنی پڑے اس سے غیر متعلق ہے. یہ سب تو آپ کرنے چکے ہیں. سال ختم ہونے ہر نئی ڈائری اور اس میں لکھے جانے والے گول، وزن کم کرنے کے منصوبے، کتابیں جو پڑھنی تھیں، سفر جو کرنے تھے، مگر ادھورے رہ گئے. کایا پلٹنے کو بھول جائیں، بس ایک گھنٹہ روز کا وعدہ کر لیں، زندگی میں جہاں بھی موجود ہیں، کام میں، بزنس میں، برتاؤ میں، اخلاق میں، رشتوں میں، بس ایک فیصد بہتر ہوجائیں. صرف %1 روزانہ کی گارنٹی چاہیے.

یہی کائیزان( Kaizen) کی فلاسفی ہے. بہت سے لوگ اسے بنیادی طور پر جاپانی فلسفہ سمجھتے ہیں. لفظ جاپانی ہے، مگر یہ فلسفہ پہلے امریکیوں نے جاپان کو سکھایا. پھر خود بھول گئے تو جاپانیوں نے واپسی انہیں سکھایا.

پش اپس کرنے والے ہر روزانہ ایک پش آپ بڑھا کر دیکھیں. رات کو اپنے آپ کو ڈسپلن کرنے والے دس منٹ سے ابتدا کریں. کتاب لکھنے کے خواہش مند ہر روز ایک صفحہ لکھتے جائیں. کھانا کم کرنے کے خواہش مند دس کیلوریز روزانہ کم کرنے جائیں. پیدل چلنے قافلے ہر روز دس قسم چلیں، اور پجر فس قدم روزہ بڑھاتے جائیں.

کامیابی کے ماہرین سے کامیابی کا نسخہ پوچھیں تو وہ ملتی جلتی بات ہی بتاتے ہیں. "بس آدھ درجن چیزیں پکڑ لو اور انہیں ہزار بار کر لو، اگر بہت ہی کرنا ہے تو پانچ ہزار بار کر لو، دوہرا لو، زندگی اسی ڈگر پر ڈھل جائے گی. کچھ لوگ اس جادوئی عادت جو” کمپاؤنڈ ایفیکٹ "کا نام بھی دیتے ہیں.

فارمولا بالکل سادہ سا ہے. پانچ چھوٹی سی چیزیں پکڑیں جو دس منٹ کے اندر ہوسکیں، پھر کر نا شروع کریں اور ہزار دن تک کرتے جائیں. ہم غلطی ایک ہی کرتے ہیں. ایک دن میں بہت کچھ کرنا چاہتے ہیں، اور کر نہیں پاتے. بہت سے دنوں میں بہت کچھ کرسکتے ہیں، مگر کرتے نہیں ہیں.

کام کی ایک بات سن لی ہے، بہت ہے. اچھی باتوں کا چسکہ مت ڈالیں، اٹھیں اور کر ڈالیں. بہت سے لوگ پوری زندگی اقوال زریں اور اچھی باتیں جمع کرتے کرتے ایک عدد زندگی تمام کر بیٹھتے ہیں. سو اچھی باتیں جمع کرنے سے ایک اچھی بات پر عمل کر گزرنا افضل ہے.

آج آپ جہاں بھی موجود ہیں، جو کچھ جانتے ہیں، جتنے امکانات آپ کے سامنے موجود ہیں، جتنی مہارتیں آپ بے سیکھی ہوئی ہیں، یہ سب آپ کے طرز عمل اور روٹین کا نتیجہ ہے.

آپ کی زندگی، لمحہ بہ لمحہ انتخاب کا نتیجہ ہے. یہ یہ انتخاب اگر آپ خود نہیں کر رہے تو کوئی اور کر رہا ہے. اور کل آپ کو اس انتخاب پر راضی ہونا ہوگا.

اگر ایک جہاز کی سمت، پرواز کے وقت صرف %1 اپنی منزل سے مختلف ہو، تو دس گھنٹے کے سفر میں وہ اپنی منزل سے ہزار میل دور جا چکا ہوگا.

یاد رکھیں، آپ کا آج کا انتخاب، آپ کا کل بنا رہا ہے. کون سا سیاست دان کتنا بدعنوان ہے، اس بارے میں مزید معلومات آپ کی صحت اور امید میں اضافہ نہیں کریں گی اور نہ ہی تازہ ترین سکینڈل پر آپ کی مہارت آپ کے مستقبل میں کوئی تبدیلی لائے گی. صرف آنکھیں مت کھولیں، جاگیں. آپ کی سوچ اور آپ کا وقت بہت قیمتی ہے. اگر سوچ میں کچرا بھریں گے تو کچرا باہر آئے گا.

بولیے، آج اپنے کام میں، خدمت میں، رشتوں میں، فرض میں، بندوں کے ساتھ، رب کے ساتھ معاملات میں %1 کیا ہے جو آپ بہتر کر سکتے ہیں؟

عارف انیس

مصنف کی زیر تعمیر کتاب "صبح بخیر زندگی” سے 

0 0 votes
Article Rating
Subscribe
Notify of
guest
0 Comments
Inline Feedbacks
View all comments
0
Would love your thoughts, please comment.x
()
x